سر ورق / ثقافت / چوڑیاں اور گجرے۔۔۔ زنیرہ ماہم

چوڑیاں اور گجرے۔۔۔ زنیرہ ماہم

 

موتیے سے زلف، عنبر سے مہکتی چوڑیاں
یاد آئیں لمس سے اس کے دہکتی چوڑیاں

دیکھ کر سونی کلائی یاد آئے تیری بات
"جان لیں میری،تری ہر دم کھنکتی چوڑیاں”

چھین لیں جاگیرِ دل حسیں ہتھیار یہ
کر دیں گھائل پایلیں، جھومر، کھنکتی چوڑیاں

حادثہ گزرا ہے کیا لڑکی پہ بڑھ کر پوچھنا
نم ہیں آنکھیں دیکھ کر اس کی دمکتی چوڑیاں

جانتا ہے وہ ادا مجھ کو منانے کی جیا
شعر لے آتا ہے کچھ، کلیاں، چمکتی چوڑیاں​

- admin

admin

یہ بھی دیکھیں

 بلوچی لوک داستان ۔۔ حانی شہ مرید ۔۔۔ ببرک کارمل جمالی 

          بلوچی لوک داستان  حانی شہ مرید تحریر ببرک کارمل جمالی بلوچی لوک داستان ﺑﻠﻮﭺ ﻣﺎﺋﯿﮟ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے