سر ورق / مکالمہ / ایک شام زویا اعجاز کے ساتھ ۔۔ سیف خان

ایک شام زویا اعجاز کے ساتھ ۔۔ سیف خان

ایک شام زویا اعجاز کے ساتھ (انٹرویو)
سیف خان
السلام علیکم… ادارہ جے ڈی پی کی نئی اور ابھرتی ہوئی قلمکارہ زویا اعجاز صاحبہ کے ساتھ محفل میں خوش آمدید.. زویا اعجاز نے بہت کم عرصے میں رائٹنگ کے حوالے سے بہت زیادہ کامیابیاں سمیٹیں.. ملک کے موقر ادارے میں جاسوسی ڈائجسٹ کے ابتدائی صفحات, سرورق کے رنگ, سسپنس کے آخری صفحات اور سرگزشت کے ابتدائی صفحات پہ اشاعت بلاشبہ ہر نئے لکھاری کا خواب ہوسکتا ہے زویا اعجاز کی تحریریں بہت کم عرصے میں نہ صرف ان صفحات کی زینت بنی بلکہ قارئین کے ایک وسیع حلقے سے داد و تحسین بھی پائی… آج وہ اپنے قیمتی وقت کے چند لمحے قارئین کے ساتھ گزار رہی ہیں.. اس کیلئے آپ کا بیحد شکریہ.. یہ انٹرویو جاسوسی آفیشل فین کلب کے ساتھ ساتھ اردو لکھاری (urdulekhari.com) پہ بھی پبلش ہورہا ہے اور اس کیلئے ہمیں امجد جاوید صاحب کی معاونت حاصل ہے.
سوالات کی جانب بڑھنے سے پہلے اپنا مختصر سا تعارف کرایئے. بچپن کہاں گزرا.. ابتدائی تعلیم کہاں حاصل کی ؟
☆ زویااعجاز
میراتعلق لاہور کے ایک پنجابی گھرانے سے ہے۔داداجی تقسیم ہند کے وقت امرتسر سے والدہ اور بڑے بھائی کے ساتھ لاہور آئے تھے۔بچپن ٹارزن اور عمرو عیارکی کہانیاں پڑھتے ہوئے گذرا۔جس زمانے میں بچے کھلونوں کی ضد کرتے ہیں‘میں۔ نے اخبارات میں بچوں کے صفحات پڑھنا شروع کررکھے تھے۔گڑیا‘کھلونے‘گھرگھر کھیلنا کبھی پسندہی نہیں تھا۔میں نے پتنگ بھی اڑائی اورکرکٹ بھی خوب کھیلی۔گھرکے پاس ایک پرچون فروش نے بچوں کی کہانیاں رکھی ہوتی تھیں۔میں اپنی ساری پاکٹ منی سے وہی خریدلاتی۔ابتدائی تعلیم گلستان ہائی سکول سے حاصل کی۔یہ ایک چھوٹاسا اردومیڈیم سکول تھا۔جس طرح پہلے وقتوں میں کسی لڑکی کی شادی کے وقت کہاجاتاتھاکہ اس گھر میں تمہاری ڈولی جارہی ہے اب جنازہ بھی وہیں سے نکلے۔کچھ ایسا ہی میرے ساتھ ہوا۔نرسری میں داخل ہونے کے بعد میٹرک پاس کرکے ہی گلستان کوالوداع کہا۔اس اسکول کی انتظامیہ بہت مخلص اورمحنتی تھی۔میں برملاکہتی ہوں کہ آج میں جوکچھ بھی ہوں اسی اسکول کی وجہ سے ہوں۔کالج میں ایڈمیشن کبھی لیا ہی نہیں۔انٹر اورگریجویشن ’حسن میموریل سائنس اکیڈمی ‘جبکہ ماسٹرز’ٹائمزکالج ‘کے نوٹس خرید کرگھربیٹھے ہی کرلیا ۔یہ تو تھا ڈگریزکاسفر۔سیکھنے سکھانے اور تعلیم حاصل کرنے کاعمل تو تادم حیات جاری رہے گا۔ 2002سے تاحال شعبہ تدریس سے وابستہ ہوں۔
جعفر حسین
چینیوٹ
کچھ اپنے رائٹنگ کے سفر کے بارے میں بتائیں جو تبصرہ نگاری سے شروع ہوا اور کہانی لکھنے پہ منتج ہوا.
☆ زویااعجاز
دس سال تک خاموش قاری رہی۔ڈائجسٹ میں خطوط پڑھتے ہوئے کافی دفعہ ذہن میں خیال آتا کہ میں بھی کہانیوں پراپنی رائے دوں لیکن پھر مصروفیات آڑے آجاتیں۔2012میں آفیشل گروپ جوائن کیا ۔دھڑادھڑ بے لاگ تبصرے پوسٹ کیے۔ سیدشکیل حسین کاظمی وہ پہلے فرد تھے جنہوں نے ان پوسٹس میں ایک تبصرہ نگار اورقلمکار کو بھانپ لیاتھا۔انہی کی رہنمائی سے2013میں پہلا تبصرہ بھیجا جو شائع نہ ہوسکا۔اس کے بعد یہ سلسلہ چل نکلا۔ایک ڈیڑھ سال میں ہی ہرگروپ سے صدابلندہونے لگی۔”آپ افسانہ نگاری شروع کریں۔“۔۔۔”آپ خود بھی کوئی کہانی لکھیں۔“اور میں ہنسی سے لوٹ پوٹ ہوکرکہتی ۔”ارے!!کہانی لکھنا میرے بس کی بات نہیں ہے۔میں کبھی نہیں لکھ پاوں گی۔“میرے لیے کہانی لکھنے کاتصورہی اس وقت ایسے تھا جس طرح پاکستانی کرکٹ ٹیم ’ساڑھے تین سورنز‘کے ٹارگٹ تک بحفاظت لینڈکرجائے۔
عظمی ناز
سرگودھا
آپ خواتین ڈائجسٹس کے لئے کیوں نہیں لکھتیں؟
☆ زویااعجاز
کبھی فرصت ہی نہیں ملی اس طرف آنے کی۔
کبیر خان
لورالائی بلوچستان
آپ قسط وار کیوں نہیں لکھتی ہیں؟
☆ زویااعجاز
بہت جلد آپ کا یہ شکوہ بھی دور ہوجائے گا۔
نزہت مبشر
فیصل آباد
زویا پس پردہ زیادہ سکون ہے یا آن لائن؟
☆ زویااعجاز
پس پردہ ۔مجھے اپنی ذات کے ساتھ وقت گذارنے کا موقع ملتا ہے۔
2.
اگلے چند سال میں زویا خود کو کیا دیکھتی ہیں ڈرامہ لکھنے کا موقع ملا تو لکھیں گی؟
☆ زویااعجاز
جی ہاں!ضرورلکھوں گی۔
3.
طاہر جاوید مغل کے علاوہ کس سے متاثر ہیں؟
☆ زویااعجاز
علیم الحق حقی ‘کاشف زبیراورعمیرہ احمد سے۔
4.
منفی پروپیگینڈے سے وقتی طور پر ہی سہی ,سوچ بوجھل ہوتی ہے یا "لگے رہو”؟
☆ زویااعجاز
منفی پراپیگنڈا ہی مجھے مزید سفر کی تحریک دیتا ہے۔ایسی صورت حال میں میری سوچ کبھی بوجھل نہیں ہوئی ۔دل ودماغ میں ایک طاقتور لہراٹھتی ہے جو میری سوچوں کوچٹانی سختی دے کرقلم مہمیزکردیتی ہے۔مجھے اسی وجہ سے ’مستقل مزاجی‘حاصل ہوئی ہے۔
5.
طاہر جاوید مغل اور عمارہ خان کے علاوہ کس رائٹر سے ملاقات ہوچکی ہے اور کس کس سے ملنے کی خواہش ہے
☆ زویااعجاز
ان کے علاوہ کسی سے ملاقات نہیں ہوئی۔صرف عمیرہ احمد سے ملنے کی خواہش ہے۔
مظہر سلیم ہاشمی
بہاولپور
ایک مخصوص لابی کے پروپیگنڈا کے مطابق آپ کی اسی فیصد کہانیاں ڈاکٹر عبدالرب بھٹی، وسیم بن اشرف کے بعد اب پرویز بلگرامی صاحب لکھتے۔۔۔ ایسے لوگوں کے لیئے کوئی پیغام؟
☆ زویااعجاز
باقی بیس فیصد کے لیے بھی کوئی دو چاررائٹرز بتادیں مجھے جن سے لکھوا کر ٹینشن فری ہو جاوں۔
جعفر حسین
چینیوٹ
خود پہ ہونے والی ذاتی تنقید سے کبھی ہمت ہاری ؟ اگر ایسا ہوا بھی تو کس چیز نے آگے بڑھنے کا حوصلہ دیا ؟؟
☆ زویااعجاز
جی نہیں!!ہمت ہارنا میری سرشت میں ہی نہیں۔
But man is not made for defeat.
A man can be destroyed but not defeated.
۔۔۔۔ارنسٹ ہیمنگوے کا یہ جملہ گذشتہ سولہ سال سے میرا زادراہ ہے۔
طلعت مسعود
دبئی
میرا سوال یہ ہے کہ آپ کی اپنی لکھی ہوئی پسندیدہ کہانی کونسی ہے ؟
☆ زویااعجاز
مسافت گزیدہ ۔۔عشق کامل
سعدیہ قادری
کراچی
زویا آپ میری پسندیدہ ترین مصنفہ ہیں. آپ کو پہلی بار یہ احساس کب ہوا کہ آپ لکھ سکتی ہیں؟ نو آموز لکھنے والوں کے لیے کوئی اہم ہدایات جو آپ دینا چاہیں؟ سنا ہے کہ لکھنا ایک الہامی جذبے کی طرح ہوتا ہے کیا واقعی ایسا ہی ہے یا کوئی بھی شخص لکھاری بن سکتا ہے؟ میری فرمائش ہے کہ آپ سسپنس میں طویل قسطوار سلسلہ لکھیں.
☆ زویااعجاز
پذیرائی کے لیے شکریہ۔۔پہلی بار اگست2014میں محسوس ہوا کہ میں بھی لکھ سکتی ہوں ۔نوآموز تومیں ابھی خود بھی ہوں اور ہمیشہ ہی رہوں گی۔بہر حال اتنا ضرورکہوں گی کہ لکھتے ہوئے کسی کی توصیف یاتنقید کوذہن میں نہ رکھیں۔صرف اپنے لیے لکھیں۔لکھناایک قدرتی صلاحیت ہے جسے وسیع مطالعہ سے مزید پراثربنایاجاسکتاہے۔قسط وار کی تجویز نوٹ کرلی گئی ہے۔
شمائلہ دلعباد
زویا اللہ دا واسطہ کرکٹ داکھیڑا چھڈ دے..چنگی بھلی سیانی ہو کے کیہڑے کم لگی آں .. چل رہن دے … بس یہ بتا پاکستان کی کرکٹ کے زوال میں کمال کو کیسے دیکھتی ہیں اور ہاں کب تک دیکھتے ہی رہنا ہےاور ہرا کام میں کھرا لیموں کی طاقت سے بھرا لیمن میکس کرے منٹوں میں برتن صاف…..
اوہ۔۔۔۔۔۔۔۔ بس ایسا ہی تخریب کار ساذہن ہو رہا ہے خود دیکھ لو کہاں کی اینٹ کہاں کاروڑا اور شمائلہ دلعباد نے سوال جوڑا.
☆ زویااعجاز
کرکٹ نال میری محبت کوئی اج دی گل تے نئیں۔جس دن عمران خان نے ورلڈ کپ جتیا سی۔میں ایس کھیڈ نال عشق کربیٹھی ساں۔نکے ہوندیاں داپیار اے۔
پاکستانی کرکٹ کے زوال میں نان پروفیشنل ازم کاکمال ہے۔
اعتزاز سلیم وصلی
فیصل آباد
آرٹیکل لکھنا زیادہ مشکل ہے یا کہانی لکھنا؟
☆ زویااعجاز
اگر بنیادی تکنیکس پر عبور حاصل ہوجائے تومشکل کچھ بھی نہیں۔
طلعت مسعود
دبئی
کوئی ایسا موضوع جس پر لکھنا چاہتی ہوں۔ لیکن لکھ نہیں پائیں۔
☆ زویااعجاز
ٹیکنالوجی پر جلدازجلدلکھناچاہتی ہوں۔
فہمی فردوس
گوجرانوالہ
بلا شبہ زویا اعجاز صرف ایک باکمال رائٹر ہی نہیں، بلکہ ایک باہمت اور آہنی حوصلہ رکھنے والی بہادر خاتون بھی ہیں۔۔
میرا سوال یہ ہے زویا سے کہ کس مزاج کی کہانیاں لکھنا زیادہ پسند ہیں۔۔ معاشرتی یا جرم و سزا پر مبنی؟
☆ زویااعجاز
شکریہ۔۔۔مجھے معاشرتی موضوعات زیادہ بھاتے ہیں۔
سید ذیشان حید کاظمی
ناروال
آپ کے خیال میں کون کون تبصرہ نگار اچھا رائٹر بن سکتا ہے۔۔؟؟
☆ زویااعجاز
ہر وہ شخص جو تبصرہ کے لیے قلم اٹھاسکتا ہے‘قلمکاربھی بن سکتا ہے۔اچھاقلمکارہونا اس کے خلوص نیت اور محنت پرمنحصرہے۔
کبیر عباسی
مری
سرگزشت میں لکھنا فکشن لکھنے سے زیادہ مشکل نہ سہی محنت طلب کام ضرور ہے،کیونکہ باقاعدہ تحقیق کر کے لکھنا پڑتا ہے جبکہ دوسری طرف ایسی تحریریں زیادہ لوگ پڑھتے بھی نہیں. لیکن اس کے باوجود آپ نے یہ زیادہ محنت طلب کام کر کے سرگزشت میں بہت زیادہ لکھا، اس کی کیا وجہ ہے؟
☆ زویااعجاز
آسانیاں توہر کوئی چاہتا ہے لیکن مجھے محنت طلب کام ہی زیادہ پسند ہیں۔۔یہ تاثر بالکل غلط ہے کہ سرگذشت زیادہ لوگ نہیں پڑھتے۔سرگذشت کی ریڈرشپ اوورسیز کے علاوہ اعلیٰ تعلیم یافتہ‘سنجیدہ اور ادب پسند طبقہ میں زیادہ ہے۔
محمد ذوالکفل
گجرات
فساد پلس کے بارے میں آپ کے تاثرات ؟
☆ زویااعجاز
پاکستان کے فیوچرکرکٹ ٹورز کے علاوہ اپ کمنگ ورلڈکپ میں فسادپلس آپ کوایک نئے روپ میں نظرآئے گا۔
قاسم انصاری
فیصل آباد
عموماً مرد قارئین کو خواتین رائٹرز کا مذہبی ٹچ والا رومانس لیے طرزِ تحریر پسند نہیں آتا، مار دھاڑ ایکشن کی دلدادہ مرد قارئین کی اک بڑی جماعت عمیرہ اور نمرہ احمد جیسی نامور رائٹرز کی منکر ہے۔
تو کیا آپ نے اس حوالے کوئی بچاو کیا ؟
کیا آپ اپنی کہانیوں میں، اپنے طرزِ تحریر میں اس بات کو خاطر میں لاتی ہیں کہ ”میری کہانیاں مردوں اور عورتوں دونوں میں مقبول ہوں۔“
☆ زویااعجاز
میں نے اس کے لیے ایک سادہ سا فارمولا اپنایاکہ قلم پرڈائجسٹ کامزاج طاری کرکے لکھاجائے۔قاری پسندیدگی کے لیے خودبخود مجبورہوجائے گا۔نمرہ اور عمیرہ بہت باکمال رائٹرز ہیں۔میں ذاتی طورپرانہیں بہت پسندکرتی ہوں۔
ماہ رخ ارباب
کراچی
میں نے پہلے پہل جب آپ کو پڑھا تو نام جانا پہچانا لگا لیکن یاد نہیں تھا کہ تبصرہ نگاری سے لکھنے کی طرف آئی ہیں۔بہرحال وہ کہانی بہت اچھی لگی ہلکی پھلکی تحریر تھی۔
مجھے ایک شکایت ہے آپ کی تحریر سے کہ موضوع کے لحاظ سے بوجھل تحریر کو آپ بوجھل ہی رہنے دیتی ہیں کچھ مزاح پیدا کرکے اسکی تلخیص کم کرنے کی کوشش نہیں کرتیں۔بے شک یہ تبصرہ سوال کا حصہ نہیں۔
سوال ہے کہ آپ ہمیشہ لکھنے کیلئے متنوع موضوعات کا انتخاب کرتی ہیں لیکن ابھی تک میں نے آپکی کوئی مزاحیہ تحریر نہیں پڑھی۔کیا مزاح لکھنا مشکل ہے یا آپکو لگتا ہے کہ مزاح کے ساتھ سنجیدہ موضوعات کا احاطہ نہیں ہوسکتا؟
☆ زویااعجاز
کوئی بھی زینہ طے کرتے ہوئے ایک ایک سیڑھی ہی چڑھا جاتاہے۔مزاح کا نمبر بھی بہت جلد آنے والاہے۔
2.
لکھنے کے اس سفر کی ابتدا سے ہم واقف ہی اس راہ پرخار کی ابتداءمیں کتنی بار مایوس ہوئیں آپ؟
یہ سوال میرے لیے بطور خاص اہمیت رکھتا ہے۔
☆ زویااعجاز
ابتدا میں قدرت ہرانسان کا حوصلہ ضرورآزماتی ہے۔دو تحاریر کے بعد میرے لیے بھی ایک مایوس کن صورتحال پیداہوئی تھی ۔اس وقت خود سے ایک عہدکیاتھا جس پر آج تک قائم ہوں۔
محمد ذوالکفل
گجرات
کے ایس کے کو مس تو نہیں کرتیں آپ ؟
☆ زویااعجاز
بہت زیادہ۔میں نے آپ سب کے ساتھ یادگاروقت گذاراہے وہاں۔سب سے پہلے کہانی نویسی کی طرف قدم بڑھانے کی تجویز مجھے ’کے ایس کے‘میں ہی توملی تھی۔
ہماحمید
لاہور
یہ سوشل میڈیا کا دور ہے اور آجکل تقریبا ہر رائٹر اپنے فینز سے جڑا ہوتا ہے. ہماری تنقید و توصیف براہ راست ان تک پہنچ جاتی ہے.. آپکے خیال میں یہ دور اچھا ہے یا وہ دور اچھا تھا جب قارئین اپنی پسندیدہ کتابیں خرید کر مصنفین تک پہنچایا کرتے تھے..؟؟؟
☆ زویااعجاز
قاری اورلکھاری میں فاصلہ ہی اس رشتے کی اصل خوبصورتی ہے۔فاصلہ مٹ جانے سے حسن گہناجاتاہے۔
2.
آپ کی تحریروں میں سنجیدگی کا تاثر آپکی شخصیت کا اثر ہے یا اسکی کوئی اور وجہ ہے..؟؟؟
☆ زویااعجاز
اس کی وجہ تحریروں کے موضوعات ہیں۔
مظہر سلیم ہاشمی
بہاولپور
کس لکھاری کو پڑھ کر خیال آتا ہے کہ کاش میں بھی کبھی ایسا لکھ سکوں؟
☆ زویااعجاز
علیم الحق حقی
جعفر حسین
چینیوٹ
زویا اعجاز کو رائٹر کس نے بنایا ؟
☆ زویااعجاز
پرویز بلگرامی سر اور سید شکیل حسین کاظمی نے ۔۔جو بادشا ہ بھی ہیں اور بادشاہ گر بھی۔
2.
کبھی کسی حقیقی واقعے کو کہانی کا روپ دیا ہے ؟
☆ زویااعجاز
فاصلوں کاکرب‘بے ثمر مسافت‘تشنہ لب‘نجات ‘زندان اور قفس شکن حقیقی واقعات پر ہی مشتمل ہیں۔
افتخار اعوان
کشمیر
بہت اچھا لگا زویا اعجاز کو ایک شام آفیشل کے ساتھ دیکھ کر.. لکھنا بلا شبہ ایک مشکل کام ہے.. بعض لوگوں کو محنت اور خوب محنت کرنے سے ہی لکھنے کا اعزاز حاصل ہو پاتا ہے.. اور.. بعض ایسے خوش نصیب بھی ہیں کہ جنہیں لکھنا شاید ورثہ میں ملا ہوتا ہے.. یا خدا کی دین ہوتی ہے. لکھنے بیٹھتے ہیں تو بس لکھتے جاتے ہیں قلم رکتا نہیں….اور تیسری قسم وہ ہوتی ہے جنہیں مخالفین لکھنے پہ مجبور کر دیتے ہیں. بے جا تنقید.. مخالفت.. راہ میں روڑے اٹکانا جیسے عوامل لکھنے کی تحریک دیتے ہیں.آپ کا تعلق کس قسم کی لکھاری کا ہے ؟ یا… آپ کو کون سا جزبہ.. کون سی بات لکھنے پہ مجبور کرتی ہے کہ… آپ کا قلم موتی بکھیرتا ہے..؟
☆ زویااعجاز
شکریہ
خداکی دین اور تنقید سے ملنے والی تحریک ہے۔
مونا عامر
لاہور
ماشاءاللہ۔
اللّہ تعالیٰ زویا کو مزید کامیابیاں عطا کرے۔آمین
☆ زویااعجاز
ثم آمین ۔۔۔شکریہ
2.
خواتین ڈائجسٹس میں کیوں نہیں لکھا ؟
☆ زویااعجاز
کبھی فرصت ہی نہیں ملی اس طرف آنے کی۔
3.
جاسوسی ، سسپنس کے لیے لکھ سکتی ہیں کب‘ کیسے اس کا احساس ہوا ؟
☆ زویااعجاز
’مسافت گزیدہ ‘پر طاہرجاویدمغل کی خوبصورت رائے اور اسی کہانی پرجاسوسی ایڈیٹر کی بے ساختہ توصیف نے تحریک دی۔
4.
اپنی آٹوگراف والی بک بقلم خود مجھے کب دیں گی ؟؟
☆ زویااعجاز
جب آپ اس کتاب کو سپانسر کریں گی۔
5.
اور ایک آخری سوال مجھے چائے پہ کب بلاوگی آخر ؟ آپکی ہمسائی… (دانت نکالتے ہوئے )
☆ زویااعجاز
جب میں چائے نوشی کی عادت میں مبتلاہوجاو¿ں گی۔(جوابی دانت نکالتے ہوئے)
ساگر تلوکر
چشمہ بیراج
تبصرہ نگاری سے لکھاری بننے کا خیال کیسے آیا اور پہلی کہانی کتنے دنوں میں مکمل کی؟
☆ زویااعجاز
ایسے فیصلے کسی انقلابی لمحہ میں ہواکرتے ہیں۔وہ بھی کوئی ایسا ہی انقلابی لمحہ تھا۔پہلی کہانی ’فاصلوں کاکرب‘تین سے چار گھنٹوں میں مکمل ہوگئی تھی۔
2.
سرگزشت میں موقع ملا تو بابائے تھل فاروق روکھڑی پر ضرور لکھیں۔
☆ زویااعجاز
انشاءاللہ ضرور۔
3.
جاسوسی سسپنس اور سرگزشت میں سے کس ڈائجسٹ میں لکھنا زیادہ پسند ہے ؟
☆ زویااعجاز
تینوں ڈائجسٹس کی اہمیت اپنی جگہ مسلمہ ہے۔
شمائلہ دلعباد
آج بھی کرکٹ کا جنون ہے یا دریا اتر رہا ہے ہولے ہولے؟
☆ زویااعجاز
کچھ جذبے ناقابل تغیرہوتے ہیں۔میراکرکٹ جنون بھی انہی میں سے ایک ہے۔
رانانومی
میرا شمار ان چند لوگوں میں ہوتا ہے جنہوں نے آپ کے تبصرہ نگار سے رائٹر بننے تک کے سفر کو بہت نزدیک سے دیکھا ہے اور ہم جانتے ہیں کہ آپ کو کتنی آزمائشوں سے گزرنا پڑاہے اور بہت سارے لوگ ان سے گھبرا کر چھوڑ دیتے ہیں ، تو میرا سوال یہ ہے کہ اتنی مشکلات میں ایسی کیا چیز ہے جو آپ کو موٹیویٹ کرتی ہے؟ کونسا جذبہ آپ کو مزید بہتر سے بہتر لکھنے میں مدد دیتا ہے؟
☆ زویااعجاز
جی ہاں!!مجھے بالکل یاد ہے کہ ’تین کھلاڑی‘قلمبند کروانے کے پیچھے آپ کی پرزور فرمائش ہی کارفرماتھی۔سفر کوئی بھی ہومشکلات ضرور آتی ہیں۔مجھے صرف ایک ہی بات تحریک دیاکرتی ہے۔
But man is not made for defeat.A man can be destroyed but not defeated…
سید ظفر علی نجمی
راولپنڈی
السلام علیکم گڑیا۔۔۔سب سے پہلے مبارک باد کہ نصف سنچری مکمل ہوئی۔۔ ایک سوال کہ کہانی لکھتے وقت منظر نگاری مشکل لگتی ہے یا مکالمہ ؟
☆ زویااعجاز
وعلیکم اسلام۔۔۔بہت شکریہ۔۔۔۔منظرنگاری ایک قدرے مشکل فن ہے۔قاری کوالفاظ کی انگلی تھمائے اسی منظر کاحصہ بنانا ہی قلم کی کامیابی ہے۔
قدیراحمد
آپ کو کہانیوں کی گولڈن جوبلی نمبر پورا کرنے پر مبارکباد اللہ تعالی مزید ترقی عطا فرمائے
☆ زویااعجاز
خیر مبارک۔۔۔۔نیک تمناوں کے لیے شکریہ۔
2.
آپ کی کہانی ” قفس شکن ” میری موسٹ فیورٹ ہے اس کہانی کو پڑھ کر لگتا ہے کہ آپ کو فینٹیسی ٹائپ کی کہانیاں بھی لکھنی چاہیں تو میرا سوال یہ ہے کہ کیا مستقبل میں فینٹیسی اور فکشن پر لکھنے کا کوئی ارادہ ہے آپ کا ؟
☆ زویااعجاز
ارادے بہت بلند ہیں۔میں ایک وقت میں ایک کام کا بیڑااٹھاکریہ سفر جاری رکھے ہوئے ہوں۔اس لیے مختلف موضوعات کی باری ان کے نمبر پرہی آئے گی۔
جمشیداقبال
لاہور
آپ ناول کب لکھیں گی؟ طویل سلسلے وار.. جاسوسی سسپنس سے ہٹ کر.
☆ زویااعجاز
کچھ نجی مصروفیات سے فراغت ملتے ہی۔۔انشاءاللہ۔
خالد شیخ طاہری
جامشورو سندھ۔
آپ کے قلم سے نکلا ہوا مزاح پڑھنا ہے.. تو سوال بھی یہ ہی ہے کہ کب تک انتظار کریں….؟
☆ زویااعجاز
امیدہے یہ انتظار جلدہی ختم ہوجائے گا۔
ثمر ملک
سرگودھا
تین رسالے تین مزاج…. سرد، گرم اور نرم.. اگر تینوں کے مزاج کے تحت آپ کے پاس پلاٹ ہو تو پہلے کس ٹائپ کو زیر قلم لانا پسند کرتی ہیں؟
☆ زویااعجاز
ایسا ابھی تک ہواتو نہیں ویسے۔
سعدیہ ہماشیخ
سرگودھا
زویا اعجاز… بہت تیزی سے لکھ رہی ہیں آپ.. کیا ڈر نہیں لگتا کہ یکسانیت کا شکار نہ ہو جائیں تحریریں؟
☆ زویااعجاز
اپنی رفتار سے میں اب بھی غیر مطمئن ہوں۔
سعدیہ ہماشیخ
سرگودھا
پہلے تبصرے کرتی تھیں.. اب تبصرے ہوتے ہیں.. زیادہ انجوائے کس دور کو کیا ؟
☆ زویااعجاز
دونوں ادوار ہی بہت خوبصورت ہیں۔
ثمرین حبیب
کراچی
میں زویا کے بارے میں زیادہ نہیں جانتی. نہ انہیں پڑھنے کا اتفاق ہوا ہے. لیکن انکی تعریف سنی ہے یہیں کہ بہت اچھا لکھتی ہیں. پہلے قاری ہوتیں تھیں اب لکھاری ہیں…ماشاءاللہ
لکھنے کے سفر کے لئیے نیک خواہشات!!
☆ زویااعجاز
شکریہ
2.
اچھا لکھیں عمدہ لکھیں اپنے قلم کی حرمت سمجھتی رہیں اور حق ادا کرتی رہیں۔ پہلی تحریر چھپنے کی سند پا گئی تھی یا مزید کوشش کرنے کا کہا گیا؟؟؟
☆ زویااعجاز
پہلی تحریر دوماہ کے بعد ڈائجسٹ میں شائع ہو گئی تھی۔
3.
 گھر میں آپکے لکھنے کو سراہا جاتا ہے یاگھر کی مرغی دال برابر سلوک ہوتا ہے؟؟
☆ زویااعجاز
 زیادہ تراہلخانہ ڈائجسٹ ریڈنگ کے شوقین ہی نہیں۔
عادل اعوان
ایبٹ آباد
زویا اعجاز کو تھوڑا بہت پڑھا ہے… آپ کی تحریریں بہت عمدہ معیاری اور سنجیدہ ہوتی ہیں.. یہ بتائیں آپ نے کس سے متاثر ہو کر لکھنا شروع کیا تھا ؟
☆ زویااعجاز
شکریہ۔۔۔میں نے شعاع اور خواتین ڈائجسٹ کی رائٹر’ سائرہ رضا‘ کے ورسٹائل اندازسے متاثرہوکرلکھناشروع کیا تھا۔
ایمانے زاراشاہ
کشمیر
پہلے آپکی تحاریر مختلف لگتی تھیں اب نہ جانے کیوں یکسانیت کا شکار لگنے لگی ہیں. پھر بھی بہت سے لوگوں سے بہترین لکھتی ہیں.. میرا سوال ہے ٹرانسجنڈر کے موضوع پر لکھنے کی پیچھے کوئی خاص وجہ یا عوامل تھے ؟؟
☆ زویااعجاز
ٹرانسجینڈر ایساموضوع ہے جس پر بہت کم لکھنے کی زحمت کی گئی ہے۔ان کے مسائل وکرب کااحاطہ اب بھی مکمل طورپرنہیں ہوپارہا۔
مہمل علی
رحیم یار خان
تبصرہ نگار سے کہانی لکھنے تک کا سفر کیسا لگا آپ کو اور کون کون سی مشکلات پیش آئیں؟
☆ زویااعجاز
یہ سفر یادگار تھا۔مختلف مقامات پرمختلف مسائل کاسامنا رہا۔میری سب سے بڑی مشکل ’ذاتی موڈ‘ہے۔اس موڈ کی بناءپر کئی کئی دن قلم سے دوررہتی ہوں۔
سعدیہ سید
اٹک
(نام تو سنا ہوگا)
☆ زویااعجاز
جی ہاں!اس نام سے کافی یادیں وابستہ ہیں۔
2.
میرا سوال ….. آپ کو بہت عرصے سے جانتی ہوں جب آپ نے کہیں کہا تھا "لفظ تو ہاتھ باندھے میرے سامنے کھڑے ہوتے ہیں کہ ہمیں لکھ لو” اور وقت نے ثابت کیا غلط نہیں کہا تھا واقعی آپ نے بیک وقت بہت سارے کام ایک ساتھ کیئے اور سب کے ساتھ انصاف کیا … کیسے مینج کرتی ہیں یہ سب ؟ اب بھی ٹیوشن پڑھاتی ہیں یا جاب کرتی ہیں؟ اگر ہاں تو پھر اتنی ساری کہانیاں کیسے لکھ لیتی ہیں؟
☆ زویااعجاز
رائٹنگ بذات خودایک فل ٹائم جاب ہے اس کے باقاعدہ آغازپرسکول جاب چھوڑ دی تھی۔کوچنگ کلاسز کاسلسلہ اب بھی جاری ہے۔
غلام جیلانی
کوٹ ادو
نصف سنچری مکمل ہونے پر مبارک… یہ اپ کی انتھک محنت ،لگن،ثابت قدمی اور مستقل مزاجی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔
☆ زویااعجاز
شکریہ
2.
میرا سوال یہ ہے کہ ایک اچھا رائٹر بننے کیلے اچھا قاری ہونا ضروری ہے اپ کے خیال میں جو نیو رائٹر ہیں ان کو زیادہ مطالعہ کی طرف دھیان دینا چاہیے یا کہانی کی مشق کی طرف ؟؟
زیادہ ضروری کیا ہے؟
☆ زویااعجاز
مطالعہ زندگی میں کبھی بھی ترک نہیں کرنا چاہیے۔مطالعہ سے محروم ذہن بہت جلدبنجرہوجاتاہے۔اگر کسی میں لکھنے کی قدرتی صلاحیت موجود ہے تو وسیع مطالعہ ہی اسے آگے بڑھنے کی راہیں دکھائے گا۔
ناہید اختر بلوچ
ڈیرہ اسماعیل خان
السلام علیکم زویا جی۔
☆ زویااعجاز
وعلیکم اسلام
2.
نام سنا ہے۔۔۔ابھی تک آپ کو پڑھا نہیں ہے۔۔۔
یہ تو آپ نے اپنے ساتھ زیادتی کر دی پھر۔
3.
آپ کے نزدیک لکھنا کیا ہے اور آپ کیوں لکھتی ہیں ؟
لکھناایک خودکارعمل ہے۔کیوں لکھنے کاسوال تو ایسے ہی ہے جیسے ’میں ٹیچنگ‘کیوں کرتی ہوں؟
4.
سائیں شاکر شجاع آبادی پر تحریر لکھنے کے پیچھے کوئی خاص وجہ ؟؟؟
ان کی مشکلات ‘جدوجہد اور نظراندازکیے جانے کے عوامل پرایک گروپ میں ’شمائلہ دلعباد‘نے خاصی تفصیلی پوسٹ کے بعد مجھے ان کی زندگی کے متعلق لکھنے کے لیے مدعوکیا۔بلگرامی صاحب سے اپروول لے کر ان پرتحقیق کی تو گنگ رہ گئی تھی میں۔
5.
جب آپ کو پڑھ لوں گی تو طرزِ تحریر پر تبصرہ کروں گی۔۔
فی الحال نیک خواہشات اور آگے بڑھتی رہیں.
آمین ۔۔۔شکریہ۔۔۔
انصرعلی
چینیوٹ
السلام علیکم…
سب سے پہلے بہت سی مبارکباد… ملک کے مشہور جرائد میں اپنی ایک پہچان بنانے پر… اس کے بعد دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ اس سے بھی زیادہ کامیابیاں عطا فرمائے آمین.
☆ زویااعجاز
ثم آمین۔۔شکریہ
2.
سوال یہ ہے کہ …
آپ کی سبھی کہانیاں ہی سنجیدہ اور تقریباً المیہ کہلائے جانے والے موضوعات پر ہوتی ہیں،اس کی کیا وجہ ہے؟
☆ زویااعجاز
اسے ایک اتفاق ہی کہا جاسکتاہے۔
3.
آپ کے قلم سے لکھا.. مزاح پڑھنے کی خواہش ہے.
یہ خواہش بھی ان شاءاللہ ضرور پوری ہوگی۔
4.
مستقبل قریب میں آپ سے کسی سلسلے وار کہانی کی توقع رکھی جا سکتی ہے یا نہیں؟
پیوستہ رہ شجرسے امیدبہاررکھ
پرویزاحمدلانگاہ
جدہ, سعودی عرب
میرا سوال ذرا فسادانہ ہے۔۔۔
جہاں پر ہر رائٹر سوشل میڈیا پر تواتر سے آرہے ہیں ماسوائے چند ایک کے وہیں آپ نے رائٹر بننے کے بعد سوشل میڈیا کو خیرباد کیوں کہہ دیا؟؟
☆ زویااعجاز
ایک نیام میں دوتلواریں نہیں سماسکتیں۔
انصرعلی
چینیوٹ
ہر مصنف کو اپنی تخلیق پیاری ہوتی ہے.. آپ کو اپنی کون سی کہانی سب سے زیادہ پسند ہے؟ اور اس کی وجہ؟
آپ کا جواب اگر سرگزشت میں چھپنے والی کہانی "عشق کامل ” ہے… تو پھر دوسرے نمبر والی بتا دیجیئے.
☆ زویااعجاز
مسافت گزیدہ
رحمان بنگش
کے پی کے
تخیلیقی سوچ کیلئے ماحول چاہیئے ہوتا ہے.. کہانی زیادہ تر تخیل کی پرواز ہی ہوتی ہے… پلاٹ سوچنے اور اس کی نوک پلک سنوارنے کیلئے کیسا ماحول آپ کو بھاتا ہے ؟
☆ زویااعجاز
مجھے مکمل خاموشی اورپر سکون ماحول درکار ہوتا ہے۔
محمدقدیر
جاسوسی سرگزشت اور سسپنس میں جگہ بنانا آسان کام نہیں تھا مگر آپ نے اپنی تحریروں کی بدولت نہ صرف جگہ بنائی بلکہ ادارے اور اپنے وقار کو بلند کیا.
اب ناول کب تک لکھنے کا ارادہ ہے
☆ زویااعجاز
پیوستہ رہ شجرسے امیدبہاررکھ
قدرت اللہ نیازی
خانیوال
کہانی لکھتے ہوئے کبھی کوئی ایسی سچویشن بنی کہ آپ کو سمجھ نہ آ رہی ہو کہ اس صورتحال کو کیسے آگے بڑھایا جائے اگر ہاں تو پھر آپ نے کیا کیا؟ اصل میں میرا ہیرو ایک جگہ ایسا پھنسا کہ جھول کے بغیر نکل نہیں سکتا تھا سو کہانی کو وہیں چھوڑ دیا کہ ساری عمر کہانیوں کے جھول ڈھونڈ ڈھونڈ اچھالتا رہا اب کیسے خود وہی کام کروں سو پڑھنے تک ہی محدود رہا ہوں.
☆ زویااعجاز
جی ہاں!کئی ایک بار۔ایسا ہوناایک فطری عمل ہے ۔ایسی صورت حال میں چند دنوں کے لیے قلم چھوڑ دیجیے۔پھروہی مسودہ دوبارہ ازسرنو پڑھیے۔آپ کے ذہن میں خودبخود کوئی نہ کوئی حل پیدا ہوجائے گا۔آپ لکھنے کی طرف بھی ضرورآئیے ۔کوئی بھی تحریر کسی تنقید وتوصیف کوذہن میں رکھے بغیر مثبت دل ودماغ سے صرف خوداطمینانی کے لیے لکھیں۔آپ کو فرق واضح محسوس ہوگا۔
زیست فاطمہ عالم
لاہور
پہلے کہانی کا نام سوچتی ہیں یا کہانی۔۔؟؟
☆ زویااعجاز
اب تک پچانوے فیصدکہانیوں کے نام تحریرمکمل ہونے کے بعد ہی لکھے ہیں۔
2.
پہلی کہانی کتنے عرصے کے انتظار کے بعد شائع ہوئی تھی ؟
دوماہ کے بعد۔
جعفر حسین
چینیوٹ
بطور رائٹر آپ کیا سمجھتی ہیں… ایک اچھی کہانی کے لوازمات کیا ہونے چاہیئں ؟
☆ زویااعجاز
روانی ‘گہرائی اور مضبوط کردار نگاری۔
2.
پاپولر فکشن اور لیٹریچر میں کیا فرق دیکھتی ہیں ؟
قاری کے ذہنی معیارکا۔
کبیر عباسی
مری
آپ اپنی تحریر کا معیار کیا رکھتی ہیں، جیسے میری کوشش ہوتی ہے کہ میری تحریر آجکل شائع ہونے والی تحریروں سے بہتر ہو. ضروری نہیں میں اس کوشش میں کامیاب رہوں بہرحال میری کوشش ہوتی ہے.اس طرح آپ اپنی تحریر کا کیا معیار رکھتی ہیں؟
☆ زویااعجاز
میرا معیار صرف اورصرف ’خوداطمینانی ‘ہے۔
عاصم شہزاد۔
میرا سوال عجیب سا ہے۔
آج کے اس سائنسی و مادی دور میں انسانی اکثریت کتاب سے دور ہوتی جارہی۔ہماری ترجیحات بدل گئی ہیں۔
☆ زویااعجاز
بیسویں صدی کی گنی چنی پیدائش ہی ایسی ہے جو کتابوں کہانیوں میں دلچسپی رکھتی ہے۔
2.
ایک مصنف ہونے کی ناطے آپ اس صورتحال کو کیسے دیکھتی ہیں۔اور آپ کے خیال میں اس کا کوئی سدباب ہے یا نہیں۔۔اگر ہے تو وہ کیا؟
اس کاسدباب صرف یہ ہے کہ ہم اپنی نئی نسل کو موبائل فون‘ٹیب اورلیپ ٹاپ دینے کی بجائے کتابیں خرید کردیں۔ان کے سامنے ٹیکنالوجی کے استعمال کی بجائے کتابیں استعمال کریں۔وہ خودبخود اس طرف راغب ہوجائیں گے۔
جعفر حسین
چینیوٹ
رائٹنگ پروفیشن سے جڑا کوئی یادگار واقعہ ؟؟
☆ زویااعجاز
جی ہاں!!سر گذشت میںشاکرشجاع آبادی پر لکھی تحریر ’اماوس کامسافر‘کے بعد راولپنڈی سے ریٹائرڈ میجر سعید صاحب نے ادارے کے توسط مجھ سے رابطہ کیا۔وہ خود بھی ایک کالم رائٹر ہیں۔میری تحریرپڑھنے کے بعد ان کا تجزیہ تھاکہ زویااعجاز کی عمر’ساٹھ‘یا’ستر ‘کی دہائی میں ہے۔ان کے بے ساختہ انداز نے بہت محظوظ کیاتھا۔اسی طرح میرے فیسبک پیج پر ’آج ٹی وی‘کے ایک رائٹر نے میسج کر کے رائے دی کہ انہیں لگتاہے زویااعجاز کسی میل رائٹر کازنانہ نام ہے۔
سید محمد شاھد
کویت
مجھے کوئی سوال نہیں کرنا۔ بس ڈائجسٹ میں آپ کا نام دیکھ کر بہت خوشی ہوتی ہے۔۔۔
بس دعا ہے اللہ تعالی آپ کو بہت ترقی دے۔ آمین۔۔۔
☆ زویااعجاز
ثم آمین۔۔۔شکریہ
مظہر سلیم ہاشمی
بہاولپور
ایک فری لانس رائٹر کی لکھاوٹ / ذاتی زندگی پہ ادارے کا انفلوئنس کس حد تک ہونا چاہیئے؟
☆ زویااعجاز
ذاتی زندگی پر کوئی بھی ادارہ اثراندازنہیں ہواکرتا۔
جعفر حسین
چینیوٹ
اپنی تحریروں میں بہت تلخ اور انتہائی خشک موضوعات کو اپنی جاندار لفاظی سے چار چاند تو لگادیتی ہیں مگر قاری جو مطالعے میں پناہ لینا چاہتے ہیں کیا اس طرح مزید ڈپریشن میں نہیں چلاجاتا ؟ مزاح کا عنصر کیوں کم رکھتی ہیں ؟
☆ زویااعجاز
میری ذاتی رائے میںقاری کی مطالعہ میں پناہ لینے کی سوچ ہی بنیادی طورپر غلط ہے۔ہمیں مشکلات کاسامنا کرناچاہیے ۔ان سے فرارکی راہیں تلاشنادانشمندی نہیں۔سنجیدہ موضوع میں مزاح کاجبری تڑکا لگانا میرے نزدیک گاجر کے حلوے میں نمک یا زنگر برگرمیں چینی کااستعمال ہے۔
مظہر سلیم ہاشمی
بہاولپور
شہ مات کے پبلش ہونے کے بعد آپ کی شخصیت میں کیا تبدیلی آئی؟
☆ زویااعجاز
شخصیت میں تبدیلی سوچ سے آیاکرتی ہے کسی معمولی کہانی کی اشاعت سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔
2.
منہ پہ تعریفیں کرنے والے اور پیٹھ پیچھے برائیاں کرنے والے ”فینز” کے بارے میں آپ کے کیا خیالات ہیں؟
لگے رہو منابھائی۔
3.
فیس بکی دانشوروں کے مشوروں کو آپ کتنی اہمیت دیتی ہیں؟
جتنی کوئی پاکستانی’ ڈونلڈ ٹرمپ ‘کو دے سکتاہے۔
4.
اگلے پانچ سال میں آپ ڈائجسٹ کو کہاں دیکھتی ہیں؟
ای بک کی صورت میں۔
جعفر حسین
چینیوٹ
پہلی تحریر کی اشاعت اور طاہر جاوید مغل صاحب سے ملاقات کے دوران محسوسات کیا تھے ؟
☆ زویااعجاز
پہلی تحریر’شہاب نامہ ‘پر تبصرہ شائع ہوئی تھی۔یہ اطلاع صبح گیارہ بجے فیسبک پر ملی۔اس روز میرا’ تدریس مطالعہ پاکستان‘ کا پیپربھی تھا۔ڈائجسٹ واپسی پر لیتے ہوئے آناتھا۔پیپرکے دوران محسوس ہونے والی سرشاری آج بھی ناقابل بیان ہے ۔ طاہرجاویدمغل صاحب کواپنے سامنے دیکھ کرحقیقی معنوں میں دھڑکنیں چندلمحوں کے لیے ساکت ہوگئی تھیں۔اس روز احساس ہوا کہ دل دھڑکنا کیسے بھولتا ہے۔
2.
آپ کی کامیابیوں میں آپ کی محنت کے علاوہ کس کا ہاتھ ہے ؟
☆ زویااعجاز
محترم پرویزبلگرامی کی رہنمائی اور سید شکیل حسین کاظمی کے مفید مشوروں کا۔
ادا علی
آپ کی ایک کہانی پڑھی ہےجو۔۔ بہت اچھی لگی تھی۔میرا سوال یہ ہے کہ کیاکوئی بھی قاری مطالعہ کے زور پر لکھاری بن سکتا ہے یا۔۔۔۔ اسکے پاس ان الفاظ کی خدا داد صلاحیت کاہونابھی ضروری ہے جو قطار باندھے ہوئے آپ کے سامنے کھڑی تھی۔۔۔۔ یایہ الفاظ کی قطار آپکے گہرے مطالعہ کے انعام کےطور پر آپکو ملی؟
☆ زویااعجاز
لکھنا ایک قدرتی صلاحیت ہے۔لیکن اکثر انسان آغازسفرمیں اپنے اس ہنر سے ناواقف ہی ہوتا ہے۔الفاظ سے کھیلنے کا سلیقہ مطالعہ ہی سکھاتا ہے۔
غزالہ یاسمین
لاہور
جاسوسی سسپنس کی نسبت سرگزشت میں آپکی کہانیاں ذیادہ تواتر سے آ رہی ہیں۔ اسکی کوئی خاص وجہ۔
☆ زویااعجاز
سرگذشت کا کرائی ٹیریا مجھے زیادہ پسند ہے۔
جعفر حسین
چینیوٹ
آپ کی کہانیوں کا پلاٹ عموما پیچیدہ انسانی رویوں اور نفسیات کے گرد گھومتا ہے اور کسی حد تک stream of consciousness ( شعور کی رو ) سے بھی لنک کرتا ہے.. اس پہ لکھنے کی کوئی خاص وجہ ہے یا یہ آپ کے فیورٹ ٹاپکس ہیں ؟
☆ زویااعجاز
یہ میراپسندیدہ ترین موضوع ہے۔
ہارون بیبرس
مردان
سسپنس میں ایک سلسلہ وار ناول کی امید رکھ سکتے ہیں۔
☆ زویااعجاز
جی ہاں بالکل رکھ سکتے ہیں۔
2.
۔۔آپ ہمارے درمیاں رہ چکی ہیں۔۔۔اور آپ کو اندازہ بھی ہو گا آفیشل ممبرز کہانیوں کے متعلق کس طرح کا مزاج رکھتے ہیں۔
میں اپنی بات کروں۔۔۔تو آپ کے انداز میں خالص معاشرتی کوئی ناول ہو۔۔۔دیہی سادہ زندگی ہو۔۔۔محبت ہو۔۔۔رقابت ہو۔۔۔اور ایکشن ہو۔
آپ کا فین۔
☆ زویااعجاز
پذیرائی کے لیے بہت شکریہ ۔۔۔انشاءاللہ بہت جلد یہ خواہش بھی پوری ہوجائے گی۔
باقرحسین
ایک کہانی بہت پرانی لکھنے پر کس چیز نے مجبور کیا اور آپ کی نظر میں موجودہ نسل کے ان حالات کا (جوکہ کہانی میں بیان کئے گئے) اصل ذمہ دار کون ہے؟
☆ زویااعجاز
ایک مشہور نجی اسکول کے بچہ سے جب میں نے پوچھا کہ قائداعظم کااصل نام کیا تھا۔اس پوزیشن ہولڈر بچے کا کہنا تھا یہی توان کااصل نام تھا۔ہم نے ان کا کوئی اور نام نہیں پڑھا بُک میں۔موجودہ نسل کے ان حالات کاذمہ دار مغربی تقلید میں انفرادیت سے محروم تعلیمی نظام ہے۔وہ اساتذہ قصوروارہیں جو معاش کی چکی میں پسنے کے باعث اپنااصل منصب کھوکرنسلِ نو کی ذہنی تربیت کرنابھول چکے ہیں۔وہ والدین ذمہ دارہیں جو اپنی اولاد کو دانستہ طورپر دادادادی‘نانانانی سے دوررکھتے ہیں۔تربیت کی مربوط کڑی جس سے ہماری نسل گذری ہے‘اب بکھرچکی ہے۔ آج کی نسل ’دوقومی نظریہ‘کی ابجدسے ہی واقف نہیں۔
عائشہ خان
ایک خاتون لکھاری ہونے کے ناطے آپ پر کس طرح کا سٹریس ہوتاہے؟
ایک مخصوص معاشرتی مائنڈ سیٹ کے مطابق خاتون لکھاری بولڈ موضوعات پر لکھے تو اسے رائٹر کے ذاتی تجربات کہاجانے لگتاہے۔
 میں نے آپکی کہانیاں پڑھی ہیں اور خوشی ہوتی ہے کہ آپکی کہانیاں مختلف ہوتی ہیں.
دوسرا سوال اگر خواتین ڈائجسٹ میں لکھا تو وہاں انکا پیٹرن فالو کریں گی (روتی ہیروئین بیسڈ) یا اپنا ہی لکھیں گی.
☆ زویااعجاز
میں اس معاملہ میں ’باغی‘ہوں اورباغی ہی رہوں گی۔
ماریہ خان
شمالی وزیرستان
بہت ہی کم عرصے میں بہترین اور کامیاب لکھاری کہوں گی آپ کو
اور تو کیا پوچھوں سمجھ ہی نہیں آرہی… بس یہ بتائیں کے لکھنے کا شوق کیسے ہوا کیا یہ بہت مشکل کام ہے ۔کس سے متاثر ہوکر کر لکھنا شروع کیا ؟ کہانی جب شروع کرتی ہیں تو کب تک مکمل کرلیتی ہیں ؟
☆ زویااعجاز
لکھنے کی طرف آمدکسی انقلابی لمحہ کا شاخسانہ تھی۔سائرہ رضاکی ورسٹیلٹی بہت بھاتی تھی۔کہانی کی تکمیل ’ذاتی موڈ‘پرمنحصر ہے۔موڈ نہ بنے تو مہینوں اس کے کردار مجھے تیوردکھاتے ہیں‘التجائیں کرتے ہیں کہ ہمیں مکمل کرلو۔جب ذہنی ودلی آمادگی ہوتو چندہی دنوں میں کہانی مکمل ہوجاتی ہے۔
جعفر حسین
چینیوٹ
لکھنے کے علاوہ آپ کے مشاغل کیا ہیں ؟
☆ زویااعجاز
کتب بینی۔۔۔کرکٹ میچز۔۔۔۔اولڈ میوزک۔
عمران رفیق
مجھے آپ کمرشل رائٹر بنتی ہوئی نظر آرہی ہیں. کیا آپ کو نہیں لگتا آپ کو ادبی تحریروں کی جانب بھی توجہ دینی چاہیئے؟ بلاشبہ ادبی تحریریں زیادہ دیر تک زندہ رہتی ہیں.
☆ زویااعجاز
بے شک یہ میرے مستقبل کے طے شدہ منصوبہ جات میں سے ایک ہے۔
مسکان ثمرین
کراچی
کیسی ہیں زویا ؟ کہانی لکھنے سے پہلے اس کا خاکہ بناتی ہیں.. یا جیسے جیسے ذہن میں خاکہ بنتا ہے لکھتی جاتی ہیں ؟
☆ زویااعجاز
الحمدللہ۔۔بہت اچھی۔۔۔کہانی لکھنے سے قبل مکمل خاکہ تیارکرتی ہوں۔
آزاد حلانی.
صوفی ازم پہ ناول لکھنے کا کبھی سوچا ہے ؟
☆ زویااعجاز
یہ بہت پچیدہ موضوع ہے۔انشاءاللہ اس پر بھی قلم آزمائی کروں گی۔
جعفر حسین
چینیوٹ
حالات حاضرہ پہ کتنا نظر رکھتی ہیں ؟
☆ زویااعجاز
اس معاملہ میں ایکسپریس نیوز کاسلوگن کہہ لیں مجھے۔۔۔۔ہر خبرپرنظر۔
2.
 ملکی حالات اور عالمی معاملات کے کسی بھی پہلو پہ کچھ رائے دینا چاہیں گی ؟
امت مسلمہ کے نام ایک پیغام۔۔۔۔”اللہ کی رسی مضبوطی سے تھام لو اور تفرقہ میں مت پڑو۔“

- admin

admin

یہ بھی دیکھیں

ڈاکٹر عبد الرب بھٹی ۔۔۔ یاسین صدیق

   ڈاکٹر عبد الرب بھٹی  یاسین صدیق ٭٭٭ ڈاکٹر عبد الرب بھٹی صاحب کسی تعارف …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے