سر ورق / ثقافت / گرمیوں کے پہناوے ۔۔۔ مدیحہ ریاض

گرمیوں کے پہناوے ۔۔۔ مدیحہ ریاض

گرمیوں کے پہناوے

مدیحہ ریاض

پاکستان کی آب و ہوا چار موسموں کے زیر اثر رہتی ہے سرما ،گرما ،بہار اور خزاں ۔ پاکستان میں سب سے طویل گرما کا موسم ہے ۔موسم گرما کی آمد کے ساتھ ہی جیسے ایک ہلچل سی مچ جاتی ہے ایک طر ف تو گرمی کی شدت سے پریشان اور بے حال ہوتے لوگ تودوسری طرف خواتین کے کھلکھلاتے چہرے ۔۔۔ایسے محسوس ہوتا ہے جیسے بڑی ہی بے صبری سے اس موسم کا انتظار کیا جا رہا تھا اور اس انتظار کی سب سے بڑی وجہ اس موسم کے کھانے اورپہناوے ہیں۔ ہر موسم اپنے ساتھ کچھ کھانے اور پہناوے لے کر آتا ہے ۔جیسے ہی لفظ گرما آتا ہے تو ذہن کے پردے پر موسمی پھل خصوصا آم ،موسمی سبزیاں،مشروبات اور سب سے اہم چیز لان کی تصاویر ابھر تی ہیں ۔موسم گرما ہو اور خواتین کا ذکر نہ ہو یہ کیسے ممکن ہے ۔ اگرچہ جہاں خواتین آ پس میںمحو گفتگو ہوں اور لان کا تذکرہ نہ ہو توبات کچھ انہونی سی لگتی ہے۔ پاکستان میں ٹیکسٹائل صنعت بام عروج پر ہے اور اسے عروج پر پہنچایا ہے لان نے ۔ چونکہ پاکستانی آب و ہوا میں موسم گرما طویل ہوتا ہے تو ہر کوئی چاہتا ہے کہ وہ اس گرم موسم میں نرم و ملائم اورآرام دہ لباس زیب تن کرے ۔ پچھلے کچھ سالوں میں لان کی خریداری میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور خصوصا ڈیزائینر لان ۔ خواتین میں ڈیزائینرلان کی خریداری اب فیشن بن چکی ہے ۔پہلے لوگ لان کے ملبوسات کی خریداری ضرورت اور پیسے کو مد نظر رکھ کر کرتے تھے۔ پہلے لان صرف لان ہوتی تھی اب جبکہ ڈیزائینر لان بن چکی ہے ۔لہذا اب خواتین کی گفتگوکا موضوع کچھ یوں ہوتا ہے ۔ارے بڑی ہی زبردست لان پہنی ہے آپ نے کس برانڈ کی لان ہے ؟ گل احمد،کھاڈی ،الکرم، ثنا سفیناز ،فردوس، نشاط ،وینیزہ ۔کلاسک ،صنم سعید ،عمر سعید،بونینزہ سترنگی ،ایچ ایس وائی ،جے ڈاٹ (جنید جمشید) ماریہ بی ،عاصم جوفا ،المیرہ ، دیپک پروانی ،سفیرے، بریزے ، ستارہ اسٹوڈیو لان اس کے علاوہ بھی مزیداوربرانڈز کی لان بھی مارکیٹ میں دستیاب ہے ۔

- admin

admin

یہ بھی دیکھیں

”کراچی لٹریچر فیسٹیول ادبی و ثقافتی حسن کا اظہار“۔کِرن صِدّیقی۔

کِرن صِدّیقی۔ 15فروری2018. ”کراچی لٹریچر فیسٹیول ادبی و ثقافتی حسن کا اظہار“۔       …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے