سر ورق / جہان اردو ادب / ہلکا پھلکا تعارف۔۔۔ مبشر علی زیدی

ہلکا پھلکا تعارف۔۔۔ مبشر علی زیدی

ہلکا پھلکا تعارف

مبشر علی زیدی
– – – – – – – – – –
علی عمران جونیئر سینئر صحافی، سینئر پروڈیوسر اور سینئر جملے باز ہیں۔
کچھ لوگ سمجھتے ہیں کہ وہ چھوٹی کہانیاں لکھتے ہیں اس لیے ان کا نام جونیئر ہے۔ یہ ایک غلط فہمی ہے۔
کئی بدگمان نام نہاد شعرا سمجھتے ہیں کہ علی عمران شاعری کرتے ہیں اور جونیئر ان کا تخلص ہے۔ اس میں بھی کوئی سچائی نہیں۔ علی عمران جونیئر اگر شاعری کریں گے تو شعروں میں وزن کہاں سے ڈالیں گے؟ ان کا تو اپنا وزن صرف ڈیڑھ دو کلو ہے۔
اصل بات یہ ہے کہ قبل مسیح دور میں قومی ہاکی ٹیم میں دو کھلاڑی ہوتے تھے جن میں سے ایک کا نام علی عمران سینئر تھا۔ دوسرے کو علی عمران جونیئر کہا جاتا ہے۔
علی عمران جونیئر سی این جی سے چلتے ہیں۔ لیکن نقل و حمل کے لیے انھیں جتنی گیس کی ضرورت پڑتی ہے، وہ خود ہی تیار کرلیتے ہیں۔ اس کے لیے انھیں کسی سے ادھار مانگنے کی ضرورت نہیں پڑتی۔
علی عمران جونیئر بہت تیزی سے کام کرتے ہیں اس لیے انھیں جیو تیز میں ملازمت مل گئی تھی۔ لیکن یہ اتنے تیز نکلے کہ تیز والے وہیں بیٹھے رہ گئے اور یہ تیزی سے ڈون پہنچ گئے۔
علی عمران جونیئر بچپن میں ڈائجسٹوں کو خط لکھتے تھے۔ بڑے ہوکر محلے کی لڑکیوں کو خط لکھنے لگے۔ آج کل بچوں کی استانیوں کو خط لکھتے ہیں۔
علی عمران جونیئر فلمی صحافت میں ممتاز مقام رکھتے ہیں۔ یہ ممتاز مقام انھیں اداکارہ ممتاز پر بائیس مضامین لکھنے کے بعد ملا ہے۔ ہر وہ اداکارہ علی عمران جونیئر کو پسند آجاتی ہے، جس کا وزن ایک ’’من‘‘ ہو۔ ان کی سب سے پسندیدہ اداکارہ انجو ’’من‘‘ ہے۔
علی عمران جونیئر اب جونیئر نہیں رہے لیکن بچپنا برقرار ہے۔ جہاں کوئی غرارے کرنے والا یا غرارے والی نظر آتی ہے، فوراً چھیڑ کے بھاگ جاتے ہیں۔
علی عمران جونیئر کو ایک بار پولیس والوں نے ترس کھاکر سڑک سے تھانے تک اپنی موبائل میں لفٹ دے دی تھی۔ اس کے بعد سے موبائل کے نام سے ایسے بدکتے ہیں کہ دوست ان کے سامنے موبائل فون کا بھی نام نہیں لیتے۔
علی عمران جونیئر پان کھانے کے شوقین ہیں۔ چھوٹے سے منہ میں بہت سے تمباکو کا پان ٹھونس لیتے ہیں۔ جب منہ میں پیک بھر جاتی ہے تو ان کا نشہ پیک پر پہنچ جاتا ہے۔
ایسے وقت میں اگر کوئی چھیڑ دے تو منہ کھول کر پیک اور گالیوں سے اس کا منہ لال کردیتے ہیں۔
مبشر علی زیدی طویل کہانیاں لکھنا چاہتا ہے لیکن سو لفظوں پر اس کا سانس پھول جاتا ہے۔ علی عمران جونیئر کا اسٹیمنا مبشر سے بھی کم ہے، وہ صرف دس لفظوں پر ہانپ جاتے ہیں۔
علی عمران جونیئر نے دس لفظوں کی پہلی کہانی مبشر کی بیاض سے چوری کی تھی۔ اس کہانی کا عنوان ’’کامیاب شادی‘‘ تھا۔ ان دس لفظوں کی ترتیب یہ تھی:
قبول، قبول، قبول، مبارک، مبارک، مبارک، مبارک، طلاق، طلاق، طلاق
علی عمران جونیئر ہلکی پھلکی غذا لیتے ہیں اور ہلکی پھلکی باتیں کرتے ہیں۔ وہ اتنے ہلکے ہیں کہ انھیں قومی اسمبلی کا حلقہ چار سو بیس قرار دے دیا گیا ہے۔

نوٹ: یہ تحریر پانچ سال پہلے سولفظوں کی کہانیوں کے خالق مبشر علی زیدی نے لکھی تھی۔۔ نئے فالوورز کیلئے یہ نیا آئٹم ہوگا۔۔علی عمران جونئیر

- admin

admin

یہ بھی دیکھیں

خالد جان۔ محمد زبیر مظہر پنوار

سوال ۔۔ آپ کا اصل اور قلمی نام ۔۔ جواب۔۔ میرا اصل نام خالد تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے