سر ورق / افسانہ (صفحہ 6)

افسانہ

کامیابی۔۔۔ ام عمارہ

”کامیابی“ وہ انسان جو اپنے شعبے کے پہاڑ کی بلند ترین چوٹی پر پہنچا ہے۔۔اُس نے اپنے راستے میں آنے والے ہر پتھر کو چوم کر خراشیں قبول کیں ہیں۔۔۔۔پھر بھی ہم کہتے ہیں کہ وہ قسمت کا دھنی تھا۔۔۔حقیقت میں یہ فقرہ کسی گالی سے کم نہیں ہوتا۔۔۔ کامیاب …

مزید پڑھیں

احساس ہے رمضان….. آمنہ بانو.

آج ماہِ رمضان کا پہلا روزہ تھا گرمی کی شدت پچھلے کچھ دنوں سے زیادہ تھی، اس کا حلق کانٹے کی طرح  سوکھ رہا تھا اس نے اونچی آواز میں درودِ پاک کا ورد شروع کر دیا، جیسے جیسے وہ درود پاک ورد کرتا جا رہا تھا اس کی پیاس کی …

مزید پڑھیں

تقریباً پونے گیارہ بجے شکیل احمد چوہان

”جہاں خیر نہیں ہوتا وہاں شر ہوتا ہے اور جہاں لنگر نہ ہو وہاں بھوک ہوتی ہے۔ آپ اگر لنگر کو ختم کرو گے تو بھوک دنیا کا سب سے بڑا مذہب بن جائے گی، بھوک ہاتھی کو بندر بنا دیتی ہے اور انسان کو حیوان۔ اللہ کی شان دیکھیں …

مزید پڑھیں

ملاح۔۔سلمان بشیر

ملاح سلمان بشیر "وہ اک ملاح کا بیٹا تھا " دادا کی وراثت سے اسکی باپ کے حصہ میں جو زمین آئی تھی اسے وہ بیچ کر شہر پڑھنے چلا گیا تھا۔۔۔باپ نے بیٹے کی خواہش کو مدنظر رکھتے ہوئے وہ ساری زمین بیچ دی اور ساری رقم بیٹے کی …

مزید پڑھیں

بزدل… راجہ یوسف

” یہ محبت کا جنون ہے فرہاد ۔۔۔ میری محبت کا جنون ۔ ایسی محبت تمہیں کسی اور سے کہاں ملے گی۔۔۔ کون ہے جو اس طرح سے تیرا راستہ روکے ۔۔۔ تیر ا ہاتھ اپنے ہاتھ میں لے کر سر راہ اتنا کچھ سوچے کہ بات سوچ کی انتہاتک …

مزید پڑھیں

گزرا وقت۔ محمد ہشام

        "اماں! اللہ ہمیں کھانے کو کب دے گا؟”             وہ چونک پڑا۔ اس بچے کی جانب دیکھنے لگا، جس کی آواز اس کی سماعتوں سے ٹکرائی تھی۔ وہ ایک عام سی شکل کا سات، آٹھ سال کا کمزور سا بچہ تھا۔ …

مزید پڑھیں

کٹی ہوئی انگلیاں زارا فراز

کمرے کے بائیں جانب کھلنے والی کھڑکی  سے چاند  جھانک   کر اندر کی ویرانی کو حیرت سے دیکھتا  پھر بادلوں کے اوٹ میں چھپ جاتا اور پھر  کچھ لمحوں کے بعد  دوبارہ جھانکنے لگتا……. اس کی ٹھنڈی روشنی اسے  بار بار  چھو رہی تھی مگر اسے اس بات کا احساس  …

مزید پڑھیں

سناٹا۔۔نشاط پروین

سنّاٹا نشاط پروین انسان ابھی ہے ،ابھی نہیں ہے۔ سوچ کر کچھ عجیب سا لگتا ہے ۔کسی شاعر نے کیا خوب کہا ہے: کیا بھروسہ ہے زندگانی کا آدمی بلبلہ ہے پانی کا مجھے ابھی تک یقین نہیں آرہا ہے کہ بڑی پھوپھی اب نہیں رہیں۔جنہوں نے اپنے بال بچوں …

مزید پڑھیں

سوکھی ندی اور پیار کا پودا۔ اقبال حسن آزاد

سوکھی ندی اور پیار کا پودا اقبال حسن آزاد اسے اپنی بیوی سے محبت نہیں تھی مگر وہ اسے اچھی لگتی تھی۔اس کے بال کالے ،گھنے اور لمبے تھے۔پیشانی سفید اور بلند تھی۔بڑی بڑی سی بیباک آنکھیں،ستواں ناک ،بھرے بھرے سے یاقوتی لب جو پکار پکار کر کہتے آو¿ ہمیں …

مزید پڑھیں