سر ورق / سعادت حسن منٹو

سعادت حسن منٹو

انجام نجیر …سعادت حسن منٹو

انجام نجیر سعادت حسن منٹو بٹوارے کے بعد جب فرقہ وارانہ فسادات شدت اختیار کر گئے اور جگہ جگہ ہندوؤں اور مسلمانوں کے خون سے زمین رنگی جانے لگی تو نسیم اختر جو دہلی کی نوخیز طوائف تھی اپنی بوڑھی ماں سے کہا ’’چلو ماں یہاں سے چلیں‘‘ بوڑھی بائکہ …

مزید پڑھیں

انار کلی …سعادت حسن منٹو

انار کلی سعادت حسن منٹو نام اُس کا سلیم تھا مگر اس کے یار دوست اسے شہزادہ سلیم کہتے تھے۔ غالباً اس لیے کہ اس کے خدو خال مغلئی تھے خوبصورت تھا۔ چال ڈھال سے رعونت ٹپکتی تھی۔ اس کا باپ پی ڈبلیو ڈی کے دفتر میں ملازم تھا۔ تنخواہ …

مزید پڑھیں

آمنہ ۔۔۔سعادت حسن منٹو

آ آمنہ سعادت حسن منٹو دُور تک دھان کے سنہرے کھیت پھیلے ہوئے تھے‘ جُمے کا نوجوان لڑکا بُندو کٹے ہوئے دھان کے پُولے اُٹھا رہا تھا اور ساتھ ہی ساتھ گا بھی رہا تھا۔ دھان کے پُولے دھر دھر کاندھے بھر بھر لائے کھیت سنہرا‘ دھن دولت رے بندو …

مزید پڑھیں

آم ۔۔۔سعادت حسن منٹو

آم سعادت حسن منٹو خزانے کے تمام کلرک جانتے تھے کہ منشی کریم بخش کی رسائی بڑے صاحب تک بھی ہے۔ چنانچہ وہ سب اس کی عزت کرتے تھے۔ ہر مہینے پنشن کے کاغذ بھرنے اور روپیہ لینے کے لیے جب وہ خزانے میں آتا تو اس کا کام اسی …

مزید پڑھیں

اُلو کا پٹھا ۔۔۔سعادت حسن منٹو

اُلو کا پٹھا سعادت حسن منٹو قاسم صبح سات  بجے لحاف سے باہر نکلا اور غسل خانے کی طرح چلا۔ راستے میں، یہ اسکو ٹھیک طور پر معلوم نہیں، سونے والے کمرے میں، صحن میں یا غسل خانے کے اندر اس کے دل میں یہ خواہش پیدا ہوئی کہ وہ …

مزید پڑھیں

افشائے راز… سعادت حسن منٹو

افشائے راز سعادت حسن منٹو ’’میری لگدی کسے نہ ویکھی‘ تے ٹٹدی نوں جگ جاندا‘‘ ’’یہ آپ نے گانا کیوں شروع کر دیا ہے‘‘ ’’ہر آدمی گاتا اور روتا ہے۔ کونسا گناہ کیا ہے؟‘‘ ’’کل آپ غسل خانے میں بھی یہی گیت گا رہے تھے‘‘ ’’غسل خانے میں تو ہر …

مزید پڑھیں

اصلی جن… سعادت حسن منٹو

اصلی جن سعادت حسن منٹو لکھنؤ کے پہلے دنوں کی یاد نواب نوازش علی اللہ کو پیارے ہوئے تو ان کی اکلوتی لڑکی کی عمر زیادہ سے زیادہ آٹھ برس تھی۔ اکہرے جسم کی، بڑی دُبلی پتلی، نازک، پتلے پتلے نقشوں والی۔ گڑیا سی۔ نام اس کا فرخندہ تھا۔ اُس …

مزید پڑھیں

آصف نے کہا۔.. سعادت حسن منٹو

آصف نے کہا۔ سعادت حسن منٹو ’’کام چور نوکر تو قریب قریب سبھی ہوتے ہیں۔ مگر مصیبت یہ ہے کہ ان میں سے اکثر باقاعدہ چور ہوتے ہیں‘‘ اور اس نے اپنے ایک نئے نوکر کی داستان سنائی جو بے حد مستعد تھا۔ اس قدرمستعد کہ بعض اوقات آصف کے …

مزید پڑھیں

آرٹسٹ لوگ …سعادت حسن منٹو

آرٹسٹ لوگ سعادت حسن منٹو جمیلہ کو پہلی بار محمود نے باغ جناح میں دیکھا۔ وہ اپنی دو سہیلیوں کے ساتھ چہل قدمی کررہی تھی۔ سب نے کالے برقعے پہنے تھے۔ مگر نقابیں اُلٹی ہوئی تھیں۔ محمود سوچنے لگا۔ یہ کس قسم کا پردہ ہے کہ برقع اوڑھا ہوا ہے۔ …

مزید پڑھیں

بارہ روپے…سعادت حسن منٹو

  منٹو کا ایک گمشدہ ا فسانہ تناظر: شمارہ نمبر ۲ ڈاکٹر اسد فیض منٹو نے سن ۴۷ءکے واقعات کو جس قدر سچائی اور انسانی جذبوں کی گھلاوٹ سے تحریر کیا ہے۔ وہ بے حد پرُ اثر اور یاد رہ جانے والا ہے۔یوں لگتا ہے کہ فسادات پر لکھی گئی …

مزید پڑھیں